اتوار. مئی 19th, 2024

امارات گروپ نے رئیل اسٹیٹ انویسٹمنٹ ٹرسٹ (REIT) لائسنس حاصل کر لیا۔

امارات گروپ نے رئیل اسٹیٹ انویسٹمنٹ ٹرسٹ (REIT) لائسنس حاصل کر لیا۔

پاکستان کے رئیل اسٹیٹ سیکٹر میں مایہ ناز امارات گروپ آف کمپنیز نے ایک اہم سنگ میل عبور کیا ہے جہاں سیکیورٹیز اینڈ ایکسچینج کمیشن آف پاکستان (ایس ای سی پی) نے انہیں ریئل اسٹیٹ انویسٹمنٹ ٹرسٹ (ریٹ) لائسنس جاری کر دیا ہے۔ یہ اعلان ایسے وقت میں سامنے آیا ہے جب رئیل اسٹیٹ مارکیٹ مشکل حالات سے گزر رہی ہے، جو امارات کی لچک اور اسٹریٹجک وژن کو ظاہر کرتا ہے۔

امارات کے پاس 15 منصوبوں کا پورٹ فولیو ہے، جس میں میریٹ کی بین الاقوامی ہوٹل چینز اور اپارٹمنٹ کمپلیکسز بھی شامل ہیں۔ اس گروپ نے کمرشل منصوبے جیسے امارات بلڈرز مال اور ایمازون مال بھی تیار کیے ہیں، جس سے اس کی صنعت پر اثر و رسوخ کو مزید تقویت ملی ہے۔

چیئرمین شفیق اکبر نے اس موقع پر اپنے خیالات کا اظہار کرتے ہوئے کہا کہ ایس ای سی پی سے ریئل اسٹیٹ انویسٹمنٹ ٹرسٹ لائسنس کا حصول امارات کی مضبوط بنیادوں اور اسٹریٹجک نقطہ نظر کا ثبوت ہے۔ ریٹ لائسنس ہمیں نہ صرف اپنے سرمایہ کاروں کے لیے مزید قدر پیدا کرنے کی اجازت دے گا بلکہ پاکستان کے ریئل اسٹیٹ سیکٹر اور وسیع تر معیشت میں بھی مثبت حصہ ڈالے گا۔ ہم اپنے اسٹیک ہولڈرز کو گراں قدر خدمات فراہم کرنے پر توجہ مرکوز کیے ہوئے ہیں۔

انہوں نے امارات کے ان کلائنٹس کے لیے دلی تشکر کا اظہار بھی کیا جن کے اعتماد اور حمایت نے امارات کو سب سے آگے پہنچایا ہے۔ انہوں نے کمپنی کے ورک فورس کے عزم اور محنت کو خراج عقیدت پیش کیا جن کی انتھک کوششوں سے امارات کو عالمی کامیابی ملی۔

ریٹ لائسنس کے حصول سے توقع کی جاتی ہے کہ وہ ایک منظم اور شفاف سرمایہ کاری پلیٹ فارم فراہم کرے گا جو مقامی اور بین الاقوامی دونوں سرمایہ کاروں کو اپنی طرف متوجہ کرے گا۔ منظم فریم ورک سرمایہ کاروں کو اپنی سرمایہ کاری کو پاکستان کی معیشت میں زیادہ مؤثر طریقے سے لگاتے ہوئے اپنے پورٹ فولیو میں مزید اضافہ کرنے کا باعث بنے گا۔ رئیل اسٹیٹ سیکٹر کے ارتقا اور ضوابط کی وضاحت میں بہتری کے ساتھ ریٹس سیکٹر کی ترقی اور ترقی میں اہم کردار ادا کرنے کے لیے تیار ہیں۔

امارات پراپرٹی ویریفکیشن سسٹم، مصنوعی ذہانت سے چلنے والے شہری منصوبہ بندی کے آلات اور سافٹ ویئر ٹیکنالوجی پارکس کے ساتھ ٹیکنالوجی میں سرمایہ کاری کر رہا ہے جو جدید اور پائیدار شہری ترقی کے لیے ان کے عزم کو ظاہر کرتا ہے۔ ان کی مہمان نوازی صنعت پر اسٹریٹجک توجہ، بشمول بین الاقوامی ہوٹل منصوبے، سیاحت اور مہمان نوازی کے شعبوں کو بڑھاتی ہے، جس سے تعمیراتی مواد اور ٹیکنالوجی کی مانگ میں اضافہ ہوتا ہے۔ کمپنی سرمایہ کاری کے منظر نامے کو مضبوط بنانے کے لیے مہمان نوازی اور ڈیجیٹل ٹیکنالوجی کو مربوط کرتے ہوئے عالمی سطح پر توسیع کا بھی ارادہ رکھتی ہے۔

جدید رئیل اسٹیٹ ٹیکنالوجی کا فائدہ اٹھاتے ہوئے، امارات اپنے ریٹ لائسنس سے فائدہ اٹھانے کے لیے اچھی پوزیشن میں ہے، جو قابل رسائی سرمایہ کاری کے مواقع فراہم کرتے ہوئے رئیل اسٹیٹ انڈسٹری میں ایک مثبت کردار ادا کر سکتا ہے۔

Related Post

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے